Global Editions

آگمینٹیڈ ریئلٹی سے وابستہ سیکورٹی اور پرائیویسی کے خطرات کا مقابلہ

فرانزیسکا رویئسنر (Franziska Roesner)
عمر: 31 سال
ادارہ: یونیورسٹی آف واشٹنگٹن

فرض کریں کہ آگمینٹیڈ ریئلٹی کو ہیک کرلیا جائے۔ اگر آپ گاڑی چلارہے ہیں اور آپ کی گاڑی میں نصب نیویگیشن میں معاونت فراہم کرنے والا آگمینٹیڈ ریئلٹی کا ڈسپلے ہیک ہوجائے، جس کے بعد آپ کو دوسری گاڑیاں یا لوگ نظر آنے لگیں جن کا کوئی حقیقی وجود نہ ہو، تو سوچیں کتنی تباہی مچ سکتی ہے۔

31 سالہ فرانزیسکا رویئسنر (Franziska Roesner) نے بہت جلد ہی اس مسئلے کی نشاندہی کرلی تھی، اور اب وہ اے آر ڈیوائسز اور ان کے صارفین کے تحفظ کے لیے سیکورٹی اور پرائویسی کی حفاظتی تدابیر پر کام کررہی ہیں۔ یونیورسٹی آف واشنگٹن سے تعلق رکھنے والے ان کے ریسرچ گروپ نے ایک ایسی اے آر ایپلی کیشن کا پروٹوٹائپ تیار کیا ہے جس کی مدد سے ہیکرز کی کوششوں کو ناکام بنایا جاسکتا ہے۔ مثال کے طور پر، اس ٹیکنالوجی کی مدد سے کسی اے آر کی نیویگیشن کی ایپ میں راہگیروں یا دوسری گاڑیوں کو چھپایا نہیں جاسکے گا۔

وہ کہتی ہیں “میں اس ٹیکنالوجی کو بہتر بنانے کے لیے خود سے بار بار یہ سوال پوچھتی ہوں کہ اگر کوئی ایپلی کیشن صحیح سے کام نہ کررہی ہو، یا ہیک ہوگئی ہو، تو اس کے کیا اثرات ہوسکتے ہیں؟”

تحریر: ریچل میٹز(Rachel Metz)

Read in English

Authors

*

Top