Global Editions

یہ ایپ بچوں کی کہانیوں میں انقلاب لاسکتی ہے

ایک سٹارٹ اپ کمپنی آواز کی شناخت کے سافٹ ویئر سے ڈیجیٹل اور حقیقی دنیاؤں کو ضم کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

میں ایک روز اپنی بیٹی کو The Very Hungry Caterpillar پڑھ کر سنارہی تھی۔ جب کہانی کا کیٹرپلر سیب کھانے لگا، میری میز سے ایک کڑک سیب کھانے کی آواز آنا شروع ہوگئی۔

یہ آواز دراصل نوول افیکٹ (Novel Effect) نامی ایپ سے آرہی تھی، جس میں کوئی کتاب بڑھ کر سناتے وقت آواز کی شناخت کی ٹیکنالوجی کی مدد سے الفاظ کے مطابق آواز اور موسیقی بجائی جاتی ہے۔ اس ایپ کا مقصد چھوٹے بچوں کی کتابوں میں دلچسپی پیدا کرنا ہے۔

نوول افیکٹ کے سی ای او اور شریک بانی میٹ ہیمرسلی (Matt Hammersley) کہتے ہیں "یہ ایپ کسی سکرین کے بغیر بچوں کی توجہ کھینچتی ہے، اور وہ دوسروں کے ساتھ انٹریکٹ بھی کرتے ہیں۔"

فی الحال یہ ایپ آئی فون اور آئی پیڈ کے لیے مفت دستیاب ہے، اور اس کا اینڈرائیڈ ورژن جلد ہی لانچ ہونے والا ہے۔ اس میں The Very Hungry Caterpillar اور Where the Wild Things Are کے علاوہ چند دوسری کتابوں کی آوازیں بھی شامل کی گئی ہیں۔

نوول افیکٹ اس وقت پیسے کماتا ہے جب صارفین اس ایپ کے ذریعے امیزان سے کتابیں خریدتے ہیں۔ اسی سال یہ کمپنی اس ایپ کا بہتر ورژن لانچ کرنے والی ہے، جس میں سو سے زائد کتابوں کی آوازیں شامل ہوں گی، اور جس کی ماہانہ فیس پانچ ڈالر ہوگی۔ ہیمرسلی کہتے ہیں کہ ان کی کمپنی ہیشیٹ بک گروپ (Hachette Book Group) نامی پبلشر کے ساتھ معاہدہ کر چکی ہے، اور مزید پبلشنگ کمپنیوں کے ساتھ مذاکرات جاری ہیں۔

ابھی کتابوں کی دنیا کو حقیقی دنیا کے ساتھ ضم کرنے کی کوششوں کا صحیح وقت ہے۔ ہمیں اپنی روزمرہ کی زندگی میں ایپل کے سری اور امیزان کے الیکسا جیسے آواز کی شناخت کے سافٹ ویئر کی عادت پڑچکی ہے۔ ریسرچ کمپنی ای مارکیٹر (eMarketer) کے مطابق اس سال بیس فیصد افراد ایک ماہ میں کم از کم ایک مرتبہ ڈیجٹل اسسٹنٹ استعمال کرنے والے ہیں، جن میں سے زیادہ تر افراد کی عمریں 25 اور 34 کے درمیان ہیں، جس کا مطلب ہے کہ ان میں سے کئی افراد ایسے ہیں جو اپنے چھوٹے بچوں کو کہانیاں پڑھ کر سناتے ہوں گے۔

نوول افیکٹ اسی بات کا فائدہ اٹھانا چاہ رہے ہیں۔ یہ کمپنی سیٹل میں امیزان کے الیکسا ایکسیلریٹر میں بھی حصہ لے رہی ہے، جس کے پیچھے امیزان کا دس کروڑ ڈالر کا الیکسا کا فنڈ ہے اور ٹیک سٹارز نامی ایکسلیٹر کا ہاتھ ہے۔

نوول افیکٹ استعمال کرنے کے لیے، ایپ میں وہی کتاب کھولیں جو آپ حقیقی دنیا میں پڑھ کر سنا رہے ہیں۔ اس کے بعد ایپ آپ کے الفاظ کے مطابق کتاب کو سکین کرکے کہانی کی مناسبت سے آوازیں نکالے گی۔ اس کے لیے آپ کو کتاب کو ترتیب سے پڑھنا ضروری نہیں ہے۔ بس کہیں سی بھی اور کسی بھی ترتیب سے پڑھنا شروع کردیں۔ اس کے علاوہ آپ کسی بھی صفحے پر جتنا مرضی وقت لگا سکتے ہیں، اور بیچ میں کسی بھی دوسری چیز کے متعلق بھی بات کرسکتے ہیں۔ ہیمرسلی کہتے ہیں کہ یہ ایپ آپ کے الفاظ ریکارڈ نہیں کرے گی، اسے صرف کتاب کے ٹیکسٹ سے غرض ہے۔

یہ کمپنی اگلے سال تک ایسے فیچرز متعارف کرنے کا ارادہ رکھتی ہے جن کے ذریعے آپ نئی کہانیاں تخلیق کرسکتے ہیں اور موجودہ کہانیوں میں نئی آوازیں شامل کرسکتے ہیں۔

مجھے اس ایپ نے کچھ حد تک متاثر تو کیا، لیکن اس میں کچھ خامیاں بھی ہیں۔ The Very Hungry Caterpillar میں سیب کھانے کے علاوہ دوسری آوازیں صحیح وقت پر اور ٹیکسٹ کی مناسبت سے نکالی گئیں۔ تاہم جب میں نے اپنی بیٹی کو دوسری کہانی پڑھ کر سنائی، اس وقت اس کی آوازیں صحیح وقت پر نہیں نکلیں۔

تحریر: ریچل میٹز (Rachel Metz)

Authors
Top