Global Editions

جہاز، ٹرین اور گاڑیاں فضائی آلودگی پھیلانے کا سب سے بڑا ذریعہ

امریکی حکومت کے جاری کردہ تجزیئے سے معلوم ہوتا ہے کہ امریکہ میں سال رواں کے دوران ٹرانسپورٹ سےکاربن کے اخراج میں اضافہ ،فرنس آئل سے چلنے والے بجلی گھروں کو بھی پیچھے چھوڑ دیگی۔ سال 2008ء میں عالمی معاشی بحران کے باعث توانائی کے استعمال میں بڑے پیمانے پر کمی ہوئی۔ یہ بھی محض اتفاق ہی تھا کہ امریکہ میں اسی عرصہ میں بجلی گھروں کو کوئلے سے چلانے کے بجائے قدرتی گیس پر منتقل کرنے کا عمل بھی وسیع پیمانے پر شروع ہوا تاکہ کوئلے کے بجائے گیس کو جلا کر بجلی کی ضروریات پوری کی جا سکیں۔ اس کے نتیجے میں انرجی سیکٹر سے کاربن کے اخراج میں کمی آئی اور یہ ایسی صورتحال میں ہوا کہ جب معیشت ترقی کر رہی تھی۔ ٹرانسپورٹ سیکٹر کی جانب سے کاربن کے اخراج کے رحجانات زیادہ حوصلہ افزاء نہیں ہیں۔ معیشت میں ترقی کے ساتھ ٹرانسپورٹ کے استعمال سے خارج ہونے والی کاربن کی شرح میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔ یونیورسٹی آف مشی گن انرجی انسٹیٹیوٹ کے جان ڈیسیکو (John DeCicco) نے ایک مقالہ تحریر کیا ہے جس میں محرکات پر روشنی ڈالی گئی ہے جو گزشتہ ساڑھے چار برسوں میں سامنے آئے اور ان میں معاشی بحالی اور پیٹرولیم مصنوعات کی قابل برداشت حد تک قیمتیں شامل ہیں۔ اسی طرح حالیہ برسوں میں گاڑیوں کی فروخت کی شرح میں بھی نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور ان میں ٹرک اور گاڑیوں کی تعداد میں اضافہ بھی نمایاں ہے اس کے ساتھ ساتھ لوگوں کی جانب سے سفر میں بھی اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ یہ رحجانات ملکی توانائی پالیسی پر نمایاں اثرات مرتب کر رہے ہیں۔ بجلی کی پیداوار کے دوران خارج ہونے والی کاربن کی شرح میں مسلسل کمی کے لئے صدر اوباما کا کلین پاور پلان مددگار ثابت ہو سکتا ہے اور اس کےساتھ ساتھ کوئلے سے چلنے والے پلانٹس کے متبادل بھی موجود ہیں۔ جہاں تک ٹرانسپورٹیشن کا تعلق ہے پٹرول اور ڈیزل طویل عرصے سے مارکیٹ پر چھایا رہا ہے اور اب بجلی سے چلنے والی گاڑیاں ان کے متبادل کے طور پر سامنے آئی ہیں تاہم ان میں اضافے کی شرح کافی سست ہے۔ اس حوالے سےجان ڈیسیکو کا کہنا ہے کہ فیول ایفی شینسی بڑھانے اور گاڑیوں سے خارج ہونے والی کاربن میں کمی کےلئے قوانین بنائے گئے ہیں تاہم یہ صرف اسی صورت موثر ثابت ہو سکتے ہیں جب بڑھتی ہوئی سفری طلب کو متوازن کیا جائے۔

تحریر: مائیک اوورکٹ (Mike Orcutt)

Read in English

Authors

*

Top