Global Editions

آئی ٹی انڈسٹری کے لئے پہلا شماری جائزہ ۔۔۔۔ پی آئی ٹی بی اور پاشا میں اتفاق

پاکستان میں موجود انفارمیشن ٹیکنالوجی انڈسٹری کے حوالے سے پہلا شماری جائزے کے لئے پاکستان انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ اور پاکستان سافٹ وئیر ہاؤسز ایسویسی ایشن (P@SHA) میں باہمی اتفاق طے پا گیا ہے۔اس امر کا اعلان چیئرمین پی آئی ٹی بی ڈاکٹر عمر سیف نے لاہور میں منعقد ہونے والی تیسری پی آئی ٹی بی گول میز کانفرنس کے موقع پر کیا۔ یہ گول میز کانفرنس حال ہی میں متعارف کرائی گئی پنجاب آئی ٹی پالیسی 2016 ءکے مسودہ پر مشاورت کے لئے طلب کی گئی تھی۔اس کانفرنس میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبے سے تعلق رکھنے والے ایک سو بیس افراد نے شرکت کی جن میں اس انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے اعلی افسران، انٹر پئینوئرز اور اس شعبہ میں تدریس سے منسلک اہل علم افراد بھی شامل تھے۔ کانفرنس میں شرکت کرنے والوں میں پاشا کی صدر محترمہ جہاں آرا، چئیر مین نیاٹیل وجیہہ سراج اور سلمان انصاری بھی شامل تھے جو سال 2000 ءمیں متعارف کرائی جانیوالی قومی آئی ٹی پالیسی کا بنیادی ڈھانچہ تشکیل دینے والوں میں بھی شامل تھے۔پنجاب آئی ٹی پالیسی 2016 ءکا بنیادی مقصد شہریوں تک انفارمیشن اینڈ کمیونی کیشن ٹیکنالوجیز تک رسائی پہنچانے کے ساتھ ساتھ ڈیجیٹیل فنانشنل کے شعبے میں ہونے والی ترقی میں شمولیت،تعلیم کے میعار میں بہتری، انٹرپینئورشپ کی ترقی اور ترویج، ٹیکسیشن اور آئی ٹی انڈسٹری کے لئے سرمایہ کاری میں اضافے کے لئے کی جانے والی کوششوں سے ممبران کو آگاہ کرنا تھا ۔

اس کانفرنس کے موقع پر ڈاکٹر عمر سیف نے ڈیجیٹل ایڈوکیسی ٹاسک فورس کے قیام کا بھی اعلان کیا جو اطلاعات تک رسائی، پرائیویسی، ہراسمنٹ، صارفین کے ڈیجیٹل حقوق اور cyber-bullying پر اپنی سفارشات پیش کریگی۔پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی پالیسی 25 نومبر تک آن لائن دستیاب ہو گی اور ماہرین اس پر رائے پیش کر سکیں گے۔ یہ پالیسی اس ویب ایڈریس پر دیکھی جا سکتی ہےwww.policy.pitb.gov.pk

تحریر: ماہ رخ سرور (Mahrukh Sarwar)

Read in English

Authors

*

Top