Global Editions

نیوز بلیٹن

میگزین

تازہ ترین

فارنزک سائنس جرائم کی نشاندہی میں مددگار

لاہور میں 2015ء میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ایک مشتبہ دہشتگرد سے ٹوٹا پھوٹا اورمکمل جلا ہوا لیپ ٹاپ ملا ، جس کی شکل و صورت ہی بگڑ چکی تھی۔ ایجنسی کو لیپ ٹاپ سے کوئی سراغ ملنے کی امید نہیں تھی لیکن پھر بھی اس نے لیپ ٹاپ کو فارنزک ماہرین کے …مزید پڑ ھیں

نئی ایپلی کیشن برائے اندراجِ افغان مہاجرین

پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ نےپاکستان میں مقیم افغان مہاجرین کی رجسٹریشن کے لیے نئی ایپلی کیشن تیار کی ہے تاکہ ان کی غیر قانونی نقل وحمل کو روکا جاسکے۔ 1979 ء میں روس، افغانستان پر حملہ آور ہوا اور اس کا یہ قبضہ 1988ء تک برقرار رہا جس کے نتیجے میں افغانستان میں خانہ جنگی …مزید پڑ ھیں

ایف بی آئی ایپل تنازع: جیت کسی کو بھی نہیں ملی

امریکی تحقیقاتی ادارے ایف بی آئی اور معروف سیلولر کمپنی آئی فون کے درمیان تنازع اگرچہ حل ہو چکا ہے اور ایف بی آئی نے آئی فون کے خلاف شکایت بھی واپس لے لی ہے تاہم اس کے باوجود اس حوالے سے اہم مسائل ابھی تک تشنہ اور حل طلب ہیں۔ اس تنازع کے بعد …مزید پڑ ھیں

اس پر بھی توجہ دیجیے

ویئر ایبل ڈیوائسز کے بارے میں یہ تصور کیا جاتا ہے کہ یہ ہمیں زیادہ سمارٹ اور صحت مند بنانے کے لیے مفیدثابت ہو سکتی ہیں۔ ان ڈیوائسز کے بارے میں یہ بھی تصور کیا جاتا ہے کہ ان کی مدد سے انسانی صحت کے بارے میں وہ معلومات بھی حاصل ہو جاتی ہیں جنہیں …مزید پڑ ھیں

واقعات کی کیمرہ ریکارڈنگ کب اور کیسے۔۔۔۔؟

امریکہ بھر میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں کے حوالے سے شکایات منظر عام پر آتی رہتی ہیں کہ وہ عوامی مظاہروں اور کسی بھی شرپسندانہ واقعہ کی سرکوبی کے دوران طاقت کا بے حساب استعمال کرتے ہیں۔ یہ بھی مشاہدے میں آیا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ایجنٹ لوگوں …مزید پڑ ھیں

مسٹر روبوٹ شو ہیکرز کی درست نمائندگی کرتا ہے

ہیکرز کون ہیں؟ کیا کرسکتے ہیں اور کس طرح کام کرتے ہیں؟ وہ اپنی سرگرمیوں کو دوسروں کی نظروں سے کیسے پوشیدہ رکھتے ہیں؟ یہ وہ سوالات ہیں جو عام لوگوں کے ذہن میں گونجتے ہیں کیوں کہ ہمارے معاشرے میں کمپیوٹرز کی اس طرح تصویر کشی کی گئی ہے کہ یہ ایسا جادو کا …مزید پڑ ھیں

جرائم کی تفتیش کے لیے ڈیٹا مائننگ کی جدید تکنیک

ماضی میں امریکہ میں انٹیلی جنس ایجنسیوں اور دیگر حکومتی اداروں میں معلومات کے تبادلے ، تعلقات کار، باہمی تعاون کا نظام بالکل موجود نہیں تھا۔ اس کا احساس امریکی حکام اور مقتدر حلقوں کو11/9سانحے کے بعد ہوا ۔ تب انٹیلی جنس ایجنسیوں اور دیگر حکومتی اداروں میں معلومات کے تبادلے ، تعلقات کار، باہمی …مزید پڑ ھیں

گھریلو ملازمین کی تصدیق کے لیےسافٹ و یئر

تصور کریں کہ آپ اپنے گھر کے لیے ایک باورچی کی خدمات حاصل کرنا چاہتے ہیں تو کیا آپ کے خیال میں آپ کے دوست کے ڈرائیور کی وساطت سے آنے والا باورچی قابل اعتبار ہو گا ؟ کیوں کہ اس نئے باورچی کے کمپیوٹرائزڈ قومی شناختی کارڈ (CNIC) کی ایک کاپی بھی آپ کے …مزید پڑ ھیں

ٹیکنالوجی کے ذریعے عادی مجرم کی گرفتاری

محمد عمران عادی مجرم ہے ،اس کے خلاف کم از کم 30 ایف آئی آر درج ہیں اور زیادہ تر ایف آئی آر ڈکیتی کے بارے میں ہیں۔اس کے خلاف سب سے پرانی ڈکیتی کی ایف آئی آر 2005ء میں درج ہوئی جب کہ صرف 2016ء میں اس کے خلاف 9مقدمات درج ہوئے۔ اس کی …مزید پڑ ھیں

جانور مصنوعی بچہ دانی میں زندہ رہنے کا ریکارڈ قائم کرچکے ہیں

جنینی بکری کے بچے فلوئیڈ سے بھرے ہوئے ایک تھیلے میں کئی ہفتوں تک زندہ رہے۔ تین سال میں قبل از وقت پیدا ہونے والے بچوں کے لئے ٹیسٹ شروع ہوسکتے ہیں۔ فلاڈیلفیا کے ڈاکٹر جنینی بکری کے بچوں کو بچہ دانی کی طرح کی ایک پلاسٹک کی تھیلی میں کئی ہفتوں تک زندہ رکھنے …مزید پڑ ھیں

ایف بی آئی ایپل تنازع: جیت کسی کو بھی نہیں ملی

امریکی تحقیقاتی ادارے ایف بی آئی اور معروف سیلولر کمپنی آئی فون کے درمیان تنازع اگرچہ حل ہو چکا ہے اور ایف بی آئی نے آئی فون کے خلاف شکایت بھی واپس لے لی ہے تاہم اس کے باوجود اس حوالے سے اہم مسائل ابھی تک تشنہ اور حل طلب ہیں۔ اس تنازع کے بعد …مزید پڑ ھیں

فارنزک سائنس جرائم کی نشاندہی میں مددگار

لاہور میں 2015ء میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ایک مشتبہ دہشتگرد سے ٹوٹا پھوٹا اورمکمل جلا ہوا لیپ ٹاپ ملا ، جس کی شکل و صورت ہی بگڑ چکی تھی۔ ایجنسی کو لیپ ٹاپ سے کوئی سراغ ملنے کی امید نہیں تھی لیکن پھر بھی اس نے لیپ ٹاپ کو فارنزک ماہرین کے …مزید پڑ ھیں

مسٹر روبوٹ شو ہیکرز کی درست نمائندگی کرتا ہے

ہیکرز کون ہیں؟ کیا کرسکتے ہیں اور کس طرح کام کرتے ہیں؟ وہ اپنی سرگرمیوں کو دوسروں کی نظروں سے کیسے پوشیدہ رکھتے ہیں؟ یہ وہ سوالات ہیں جو عام لوگوں کے ذہن میں گونجتے ہیں کیوں کہ ہمارے معاشرے میں کمپیوٹرز کی اس طرح تصویر کشی کی گئی ہے کہ یہ ایسا جادو کا …مزید پڑ ھیں

شہری انتظام کیلئے جدید مگر سستی ٹیکنالوجی کی ضرورت

پوری دنیا میں پھیلے ہوئے شہر، خواہ وہ امیر ہوں یا غریب، جدیدٹیکنالوجی کو پوری طرح سے اختیار کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ ان شہروں میں بڑھتے ہوئے چیلنجز کا مقابلہ کرنے کیلئے موبائل ایپلی کیشنز، سینسرز اور دیگر ٹیکنالوجیز میدان میں آگئی ہیں ۔

Top