Global Editions

افریقہ کی پہلی سمارٹ فون تیار کرنے والی فیکٹری۔۔۔

اب تک کی بڑی خبر یہ ہی ہے کہ افریقہ کی ایک کمپنی Onyx Connect نے 10.5 ملین ڈالر کی فنڈنگ جمع کر لی ہے اور اس طرح وہ افریقہ کی پہلی کمپنی بننے جا رہی ہے جو وہاں پر سمارٹ فونز تیار کرے گی۔ بلوم برگ میں شائع ہونے والے ایک مضمون کے مطابق کمپنی کی جانب سے سمارٹ فونز تیار کرنے والی فیکٹری آئندہ سال کے اوائل میں اپنی پیداوار شروع کر دے گی اور اس فیکٹری میں اینڈروائیڈ آپریٹنگ سسٹم کے حامل سمارٹ فونز تیار کئے جائیں گے۔ یہ امر قابل تحسین ہے کہ ٹیک دنیا میں دورافتادہ اور پس ماندہ سمجھے جانیوالے اس براعظم میں یہ کام ہونے جا رہا ہے۔ افریقی شہری تقریباً امریکی شہریوں کے مساوی تناسب کے ساتھ ہی سمارٹ فونز استعمال کر رہے ہیں تاہم یہ سمارٹ فونز نہ صرف مہنگے ہیں بلکہ یہ چین اور دیگر ممالک کے تیار کردہ ہیں جس کی وجہ سے ان کی قیمت بہت ہی زیادہ ہے۔ تاہم اب اونکس کا کہنا ہے کہ وہ اس خطے کے لئے سمارٹ فونز تیار کرے گی اس سے نہ صرف وہاں روزگار کے مواقع پیدا ہونگے بلکہ وہاں کے شہریوں کو کم قیمت پر سمارٹ فونز بھی دستیاب ہونگے۔ کمپنی کے مطابق وہ صرف تیس ڈالر کی لاگت سے سمارٹ فون تیار کرے گی جس میں کیمرہ اور ایک گیگابائیٹ کی میموری ہو گی۔ تاہم کمپنی کی جانب سے فونز کی تیاری کی ضمن میں ایک سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ "VMK" کا کیا مطلب ہے۔ یہ ایک ایسا سوال ہے جس کا ابھی تک جواب نہیں ملا تاہم ذرائع یہ بتاتے ہیں کہ کمپنی چین سے فونز خریدے گی اور پھر اس پر VMK کا لوگو کُندہ کریگی اور پھر اس کو کانگو اور آئیوری کوسٹ میں فروخت کے لئے پیش کر دے گی۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ VMK کو افریقہ میں سمارٹ فونزبنانے اور بیچنے کے حقوق حاصل نہیں ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ مقامی طور پر ایسی مہارتیں موجود نہیں ہیں جن کے ساتھ اس طرح کے ہارڈ وئیر تیار کئے جا سکیں۔ اس حوالے سے اونکس کا کہنا ہے کہ وہ اپنے فونز کے لئے پرزہ جات چین کی فیکٹریوں سے حاصل کرنا چاہتی ہے تاہم ان فونز کا ڈیزائن ان کے کیسز اور مستقبل کے ماڈلز کے لئے ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ افریقہ میں ہی کی جائیگی۔ اس کے ساتھ اونکس کا کہنا ہے کہ اس نے گوگل اور دیگر ٹیک کمپنیوں کے ساتھ افریقہ کے لئے لیپ ٹاپ، ٹیبلٹس اور دیگر ڈیوائسز تیار کرنے کے لئے بھی مذاکرات کئے ہیں۔ اگرچہ اس امر کے قریب یہ سوال موجود ہے کہ یہ فونز کون تیار کر رہا ہے تاہم یہ امر ضرور ہے کہ سمارٹ فون تیار کرنے والی فیکٹری کا قیام اپنے طور پر بھی ایک بڑا قدم ہے اور اس طرح اس خطے میں مقامی سرمایہ کاری اور ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ کے ضمن میں مزید کام کرنے کی راہ ہموار ہو گی۔ اونکس کی جانب سے اٹھایا جانیوالا حالیہ قدم بلاشبہ ایک بڑا قدم ہے تاہم اس ضمن میں مزید اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔

تحریر: مشعل رئیلائے (Michael Reilly)

Read in English

Authors
Top