Global Editions

اب کرکٹ سے لطف اندوز ہوں ۔۔۔ ٹیکنالوجی کی مدد سے

دنیا بھر میں کرکٹ کے شائقین بے شمار ہیں اور اگر آپ بھی کرکٹ کے شیدائی ہیں تو آپ بھی یقیناً اس کوفت کاشکار ضرور ہوئے ہونگے جب میچ دلچسپ مرحلے میں ہو، اور آپ کو کوئی غیر اہم فون کال موصول ہو یا اچانک کیبل میں خرابی پیدا ہو جائے یا لائٹ چلی جائے اور اس دوران کوئی کھلاڑی آؤٹ ہو جائے یا کوئی زبردست پرفارمنس کا مظاہرہ کرے۔ اس صورتحال میں آپ کوفت کا شکار ہو جاتے ہیں اور پھر ٹی وی سکرین پر نظریں جمائے بیٹھے رہتے ہیں کہ کب چینل پر اس منظر کا ری پلے ہو گا اور پھر یہ آپ کی قسمت ہے کہ آپ کو دوبارہ وہ مناظر دیکھنے کو ملیں یا نہیں۔ تاہم اب ایسا نہیں ہو گا ایک پاکستانی کمپنی نے کرکٹ کے شیدائیوں کو ایسی کوفت سے بچانے کےلئے اقدامات کئے ہیں اور اب آپ دنیا بھر میں کرکٹ سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔
پاکستانی کمپنی کی جانب سے کرکٹ کی بال ٹو بال جھلکیوں کے لئے ایک ویب سائٹ متعارف کرائی ہے جس کا نام Cricingif ہے اور یہ ویب سائٹ 17 نومبر 2016 سے کام کا آغاز کر چکی ہے اور آپ کو معلوم ہی ہو گا کہ اس وقت قومی کرکٹ ٹیم نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کے دورے پر ہے۔ اس پلیٹ فارم کے ذریعے نہ صرف آپ لائیو کرکٹ سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں بلکہ کھیل کے دیگر پہلوؤں سے بھی آگاہ رہ سکتے ہیں۔ صارفین کرکٹ سے متعلق تمام امور سے باخبر رہ سکتے ہیں چاہے وہ آن گراؤنڈ سرگرمیاں ہوں یا آف گراؤنڈ۔ اس کے ساتھ ساتھ کرکٹ سے حوالے سے معلوماتی تحاریر اور تجزیے بھی صارفین کے لئے میسر ہونگے۔

اس حوالے سے Cricingif کے شریک بانی اور چیف ایگزیکٹو قاسم ظفر کا کہنا ہے کہ ہمارا مقصد کھیل کے شائقین کو ان کی پسندیدہ ٹیم اور کھلاڑیوں کی سرگرمیوں سے آگاہ رکھنا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ ہم صارفین کے لئے آن لائن پولز اور کوئز کا بھی اجراء کر رہے ہیں جو صارفین کی دلچسپی کا سبب ہونگے۔

واضح رہے کہ یہ پہلا موقع نہیں جب یہ سٹارٹ اپ مرکز نگاہ بنا ہے۔دوسال قبل Cricingif کو اس وقت زبردست عوامی پزیرائی حاصل ہوئی جب اس نے برق رفتاری اور موثر کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ اس کمپنی نے بال ٹو بال لائیو کرکٹ سکورز کو کلپس کے ساتھ انٹرنیٹ پر مقبول ادارے ESPN کے مقابلے میں چھ سیکنڈ پہلے نشر کرنا شروع کیا۔ اس کمپنی نے اپنی اس صلاحیت اور کارکردگی سے بہت سے بین الاقوامی کرکٹ ماہرین کی توجہ حاصل کر لی جن میں ٹام موڈی، فریڈ بائیکاٹ، بین سٹوکس شامل ہیں جو سوشل میڈیا پر اس سائٹ کو مسلسل فالو کرتے رہے۔

اسی طرح سال 2015 ءمیں ٹی 20 کرکٹ ورلڈ کپ کے موقع پر بھی اس پلیٹ فارم کے ذریعے 5.7 ملین سے زائد کلپ ہر ماہ نشر کئے گئے اور اس کے صارفین کی تعداد تیس ہزار تک پہنچ گئی اور سوشل میڈیا پر اس کے فالورز کی تعداد 47 ہزار سے تجاوز کر گئی۔ اس پلیٹ فارم کی مقبولیت نے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل سمیت دیگر ممالک کے کرکٹ بورڈز کی توجہ اپنی جانب مبذول کرا لی۔ اسی تناظر میں آئی سی سی، بھارت اور آسٹریلیا سمیت کئی ممالک کے کرکٹ بورڈز نے اس پلیٹ فارم کو نوٹسز ارسال کئے کہ وہ اپنی سائٹ بند کر دیں کیونکہ ان کے پاس کرکٹ کا مواد نشر کرنے کا ڈیجیٹل لائسنس نہیں ہے۔
اس کے بعد Cricingif نے اپنی سرگرمیاں بند کر دیں۔

اب چار ملین ڈالرز کی فنڈ ریزنگ اور لائسنس جیسے معاملات سے نبردآزما ہونے کے بعد یہ کمپنی دوبارہ لانچ کی گئی ہے اور ظفر کے مطابق یہ Cricingif کے لئے بہت یادگار اور اہم لمحہ ہے جو ہمارے سفر کے لئے اہم مقام رکھتا ہے۔

تحریر: نشمیا سکھیرا (Nushmiya Sukhera)

Read in English

Authors
Top