Global Editions

اب انجنیئرنگ سمجھے بغیر بھی مصنوعات ڈیزائن کرنا ممکن ہے

نام: ایڈریانا شلز (Adriana Schulz)

عمر: 34 سال

ادارہ: یونیورسٹی آف واشنگٹن

جائے پیدائش: برازیل

ایڈریانا شلز نے ایسے ٹولز ایجاد کیے ہیں جن کی مدد سے عام صارفین میکانکس، جیومیٹری یا پیچیدہ انجنیئرنگ کی سمجھ بوجھ رکھے بغیر روبوٹس سے لے کر کبوترخانوں تک، کئی مختلف قسم کی چیزيں بناسکتے ہيں۔ ان ٹولز کو بہت آسانی سے ایک کمپیوٹر پر ڈریگ اینڈ ڈراپ انٹرفیسز (drag-and-drop interfaces) کے ذریعے استعمال کیا جاسکتا ہے۔

شلز کہتی ہیں کہ ”مجھے یہ سوچ کر بہت خوشی ہورہی ہے کہ اب ہم تخلیق کاری کے اگلے مرحلے، یعنی تخلیق کاری کے انقلاب، کی جانب بڑھ رہے ہیں۔ “

ان کے سسٹمز میں روبوگامی (Robogami) نامی ٹول شامل ہے، جس کی مدد سے کوئی بھی شخص بنیادی روبوٹس تیار کرسکتا ہے۔ کوئی بھی صارف زمین پر چلنے والے روبوٹ کی شکل ڈیزائن کرسکتا ہے، جس کے بعد روبوگامی اسے نقشے کی شکل دیتا ہے جسے عام یا تھری ڈی پرنٹنگ کے ذریعے تیار کردہ پرزوں کی مدد سے تیار کیا جاسکتا ہے۔

اس کے علاوہ، شلز نے ایک اور ٹول بنایا ہے جس کی مدد سے صارفین بیٹری، اخراجات، اور وزن اٹھانے کی صلاحیت کی ضروریات کے مطابق اپنے ذاتی ڈرونز بناسکتے ہيں۔ ان کے سسٹم کے الگارتھمز میٹیریل سائنس اور کنٹرول سسٹمز کا فائدہ اٹھاتے ہوئے خودکار طور پر تخلیق کاری اور کنٹرول سافٹ ویئر تیار کرتے ہیں۔

شلز اب یونیورسٹی آف واشنگٹن کے سینٹر فار ڈیجیٹل فیبریکیشن (Center for Digital Fabrication) کی بنیاد رکھ رہی ہیں، جس کے بعد وہ اس کی سربراہی بھی کریں گی۔ وہ اپنے ٹولز کو تجارتی شکل دینے کے لیے مقامی ٹیکنالوجی اور تخلیق کاری کی کمپنیوں کے ساتھ کام بھی شروع کرنے والی ہیں۔

تحریر: رس جسکیلیئن (Russ Juskalian)

تصویر: ڈیوڈ کرٹس (David Curtis)

Read in English

Authors

*

Top