Global Editions

کیا ڈیجیٹل انقلاب دنیا کے لئے بہتر ہے؟

دنیا بھر میں انٹرنیٹ ٹیکنالوجی تیزی سے پھیل رہی ہے اور انٹرنیٹ کے اس پھیلاؤ میں اضافہ کی وجہ سمارٹ فونز اور دیگر ٹیکنالوجیز بھی ہیں۔ تاہم بعض اوقات ٹیکنالوجی کا اس طرح وسیع پیمانے پر پھیلاؤ فائدے کے بجائے نقصان کا سبب بھی بن جاتا ہے اور خاص طور پر جب اس دوڑ میں کم ترین وسائل کے ساتھ ترقی پزیر اقوام بھی شامل ہو جائیں۔ اس حوالے سے عالمی بنک نے اپنی ایک رپورٹ میں دنیا بھر میں پھیل جانیوالی ڈیجیٹل ٹیکنالوجیز کا جائزہ لیا ہے جس سے یہ امر سامنے آیا ہے کہ ٹیکنالوجیز کا پھیلاؤ اس حد تک فائدہ مند نہیں رہا جس حد تک اس کی توقع کی جا رہی تھی۔ اگرچہ عالمی بنک کی اس رپورٹ میں کئی مثبت پہلو بھی سامنے آئے ہیں جن میں معاشی شرح نمو میں اضافہ، تعلیم کا فروغ وغیرہ شامل ہیں اور ترقی یافتہ ممالک کے لئے انہیں ڈیجیٹل ڈیوڈنڈ کہا جا سکتا ہے تاہم رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ٹیکنالوجی کا فروغ ترقی پزیر ممالک میں معاشی ناہمواری، وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم کا سبب بھی بن رہی ہے کیونکہ ان ممالک میں یہ ٹیکنالوجیز سب کو دستیاب نہیں جس کی وجہ سے ان سے صحیح معنوں میں استفادہ حاصل نہیں کیا جا سکتا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چند معاملات میں سماجی ناہمواری خطرناک ثابت ہو سکتی ہے۔

تحریر: ول نائیٹ (Will Knight)

Read in English

Authors
Top