Global Editions

1 نیوز راؤنڈ اپ

 

1 – پاکستان میں موبائل براڈ بینڈ تھری جی اور فور جی کے استعمال میں روز بروز تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق اپریل 2016کے دوران موبائل براڈ بینڈ کے صارفین نے صرف ایک ماہ کے دوران ۰۳ سے ۰۴ پیٹا بائٹس ڈیٹا استعمال کیا۔ یہ براڈ بینڈ کی گزشتہ چھ ماہ کے دوران استعمال ہونے والی سب سے زیادہ شرح ہے۔ مزید پڑ ھیں

2 – اب سمندر میں چھپے ہوئے خزانوں کی تلاش روبوٹ کریں گے۔ سٹینفورڈ یونیورسٹی نے ایک ایسا روبوٹ تیار کیا ہے جس کی وجہ سے سمندر میں چھپے خزانے تلاش کیے جا سکیں گے۔اس روبوٹ کی مدد سے حال ہی میں کِنگ لوئیس نے la lune کا تین سو پچاس سال پرانا سمندر برد ہونے والے خزانے کو دریافت کیا گیا ہے۔ اس خزانے کو شمالی فرانس کے علاقے toulon سے دریافت کیا گیا تھا۔ مزید پڑ ھیں

3 – دنیا کے لیے خطرہ بننے والے zika وائرس کی فوری تشخیص کے لیے ٹیسٹس کی نئی ٹیکنالوجی تیار کر لی گئی ہے جو کہ ہیلتھ ورکرز کے لیے zika وائرس کے علاج میں بہت مددگار ثابت ہو سکتی ہے۔ اس ٹیسٹ کے لیے ایک مخصوص کاغذ تیا ر کیا گیا ہے جو مصنوعی حیاتیاتی مرکبات سے تیار کیا گیا ہے۔ اس نئی تشخیصی ٹیکنالوجی کی مدد سے zika اور مچھروں کے ذریعے بیماری کا سبب بننے والی دیگر بیماریوں جن میں ڈینگی بھی شامل ہے آسانی سے تفریق کی جا سکتی ہے۔ مزید پڑ ھیں

4 – پاکستان کے دفترِ خارجہ کی ویب سائٹ پر مسلسل سائبر حملے ہو رہے ہیں۔ اس بات کا اعتراف انہوں نے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خارجہ امور میں کیا۔ دفترِ خارجہ حکام کا یہ کہنا ہے کہ سائبر حملوں کی روک تھام اور کمیونیکیشن سسٹم کو مضبوط کرنے کے لیے دیگر اداروں سے مدد لے رہے ہیں۔مزید پڑ ھیں

5 – بڑھتی ہو ئی ماحولیاتی آلودگی کے خاتمے کے پیشِ نظر فوسل فیول کے متبادل کے طور پر بیٹری یا بجلی سے چلنے والی گاڑیوں کو ایک بہترین متبادل کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ کیونکہ یہ نہ صرف ماحول دوست ہیں بلکہ ان کا استعمال بھی کم خرچ ثابت ہو گا۔ بلوم برگ نیو انرجی فنانس (bnef)نامی کمپنی کی جانب سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ آئندہ دیہائیوں میں بجلی سے چلنے والی گاڑیاں کم خرچ اور فوسل فیول کے مقابلے میں ایک بہترین نعم وبدل ثابت ہو سکتی ہیں۔ مزید پڑ ھیں

6 – اور ذیابطیس کے مریضوں کے لیے خوشخبری۔ ماہرین نے ایک ایسی جیل تیا ر کی ہے جس سے انجکشن کے ذریعے جسم میں داخل کیا جا سکتا ہے۔ اس جیل کی مدد سے اعضاء کے لیے خون لے جانے والی شریانیں جو کہ ذیابطیس یا کسی اور وجہ سے متاثر ہو چکی ہیں۔ ان کو دوبارہ فعال بنایا جا سکے گا۔ اور ان میں خون کی روانی کو برقرار رکھنے کے لیے ان کی مرمت بھی کی جا سکے گی۔ مزید پڑ ھیں

Authors

*

Top