Global Editions

صارفین کی لاپرواہی انکے موبائل ڈیٹا کی سیکورٹی کے لئے خطرناک

موبائل کمپنیوں اور سمارٹ فونز پرمختلف ایپلی کیشنز متعارف کرانے والی کمپنیوں کے ساتھ ساتھ صارفین خود بھی اپنے موبائل ڈیٹا کی حفاظت کے ذمہ دار بھی ہیں یہ امر بھی مشاہدے میں آیا ہے کہ صارفین کی اکثریت اس ضمن میں کوتاہی برتتی ہے۔ صارفین کی اس بے پرواہی کا نقصان ایک جانب تو صارفین کو موبائل ڈیٹا تک غیر متعلقہ افراد کی رسائی کے باعث جھیلنا پڑتا ہے تو دوسری جانب موبائل فون ایپلی کیشنز بنانے والی کمپنیوں کی ساکھ بھی متاثر ہوتی ہے اور ان کمپنیوں کی جانب سے صارفین کو مہیا کی جانیوالے سیکورٹی فیچرز بھی متاثر ہوتے ہیں۔ مختلف ایپلی کیشنز جن میں ریڈفون (Redphone) اور سگنل (Signal) شامل ہیں استعمال کنندگان سے درخواست کرتی ہیں کہ وہ دوران گفتگو موبائل فون کی سکرین پر نمودار ہونے والے الفاظ کی اپنے مخاطب کے ساتھ تصدیق کر لیں کہ دونوں جانب موبائل فون سکرینز پر ابھرنے والے الفاظ یا نمبر یکساں ہیں تاکہ ثابت ہو جائے کہ ان کی گفتگو محفوظ ہے لیکن مشاہدے میں آیا ہے کہ صارفین ایسے انتباہ کو نظر انداز کرتے ہوئے گفتگو جاری رکھتے ہیں اور موبائل ڈیٹا چوری ہونے کی صورت میں ایپلی کیشن تیار کرنے والوں کو مورد الزام ٹھہراتے ہیں اگرچہ وہ خود اس کوتاہی کے ذمہ دار ہوتے ہیں۔ صٓارفین کی جانب سے روا رکھی جانیوالی ایسی لاپروائی کا جائزہ لینے کے لئے یونیورسٹی آف الباما برمنگھم میں ایک جائزے کا اہتمام کیا گیا جس میں درجنوں طالبعلموں کو زیر مشاہدہ رکھا گیا۔ اس کے لئے ایک نقلی ایپلی کیشن کا سہارا لیا گیا اور زیر مشاہدہ افراد کو پہلے ایک دو سے چار الفاظ پر مشتمل ایک لائن سنائی گئی اور کہا گیا کہ اس کے تسلسل کو ذہہن نشین کر لیں بعد ازاں زیر مشاہدہ افراد کو کہا گیا کہ وہ ایک ویب برائوزر کی مدد سے آن لائن سرور پر فون کریں اور تعین کریں کہ سرور کے ذریعے بیان کی گئ لائن کا تسلسل وہی ہے جو پہلے سنایا گیا تھا زیر مشاہدہ افراد سے یہ بھی کہا گیا کہ وہ اس امر کا بھی تعین کریں کہ سرور کے ذریعے آواز کا بھی تعین کریں کہ یہ وہ وہی آواز ہے جو انہیں پہلے سنائی گئی تھی۔ مشاہدے میں یہ بات سامنے آئی کی زیر مشاہدہ افراد نے غلط تسلسل والی آواز سن کر بھی کال وصول کی اور دلچسپ امر یہ ہے کہ اکثریت نے صحیح تسلسل والی آواز سن کرکال وصول کرنے سے انکار کر دیا۔ تحقیق کار اپنی اس سٹڈی کے نتائج لاس اینجلس میں ہونے والی کمپیوٹر سیکورٹی کانفرنس میں پیش کرینگے۔ تحقیق کاروں کے مطابق اس مشاہدے میں 128 طالبعلموں نے شرکت کی اور ان کا کہنا تھا کہ اس سٹڈی سے یہ امر ثابت ہوا ہے کہ صارفین موبائل فون ایپلی کیشنز استعمال کرتے ہوئے لاپرواہی کا مظاہرہ کرتے ہیں اور اس طرح وہ موبائل ڈیٹا کی سیکورٹی پر سمجھوتہ کر لیتے ہیں۔

تحریر: ریچل میٹز (Rachel Metz)

Authors
Top