Global Editions

3 نیوز راؤنڈ اپ

 

1 –وفاقی وزیرِ خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ ہر سال سو طلبہ کو سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں وظائف دیے جائیں گے۔ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے سائنس میں مسلم دنیا بہت پیچھے ہے۔ زراعت ، صحت ، سماجی اور معاشی شعبوں میں ٹیکنالوجی کا استعمال بہت بڑھ گیا ہے۔ اس لیے سائنس اور ٹیکنالوجی کے حصول میںہمیں ایک دوسرے کامعاون بننا ہو گا۔وزیرِ خزانہ نے ترقی پزیر ممالک کے طلبہ کے لیے بھی وظائف دینے کا اعلان کیا ہے۔ مزید پڑ ھیں

2 – ۔ قوتِ سماعت کے لیے جدید ہیڈفون تیار کر لیا گیا ہے۔ Nura کمپنی کے کو فاؤنڈر اور چیف ایگزیٹو آفیسر Kyle Slater کے مطابق ان کی کمپنی نے ایک ایسا ہیڈ فون تیا ر کیا ہے جو کہ روایتی کاکردگی کے ساتھ ساتھ اس امر کا بھی جائزہ لیتا ہے کہ کون سی فریکیونسی صارف کی سماعت کے لئے بہتر ہے۔ اور کس طرح کے میوزک کے لیے کتنا والیم ہونا چاہئے۔ یہ ہیڈ فون ذاتی میوزک ایکیولائزر پر کام کرنے کے علاوہ استعمال کے دوران مختلف دھنوں کے صارف پر صوتی اثرات کا جائزہ لیتا ہے جو میوزک کوبھی متوازن کرتا ہے۔ مزید پڑ ھیں

3 – ماہرین کے مطابق کمپیوٹر سے موبائل فون کو چارج کرنا بڑا سیکیورٹی خطرہ قرار دیاہے۔ روس سے تعلق رکھنے والی ایک معروف اینٹی وائرس کمپنی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ سمارٹ فون جب کمپیوٹر سے جڑتا ہے تو دونوں ڈیوائسز آپس میں بہت سی اہم معلومات کا تبادلہ کرتی ہیں۔ اس تبادلے میں موبائل فون کمپیوٹر کو اپنا نام، کمپنی ،ڈیوائس کی قسم، سیریل نمبر، فرم وئیر کی معلومات ، آپریٹنگ سسٹم کی تفصیلات اور الیکٹرانک چپ آئی ڈی جیسی اہم معلومات فراہم کرتا ہے۔ بظاہر یہ معلومات بے ضرر لگتی ہیںلیکن ماہرین کے مطابق فون کو ہیک کرنے کے لیے اتنی تفصیلات کافی ہیں۔

4 – عالمی ادارئہ صحت نے اولمپکس کا مقام تبدیل کرنے کی سائنس دانوں کی اپیل مسترد کر دی ہے۔ اپیل میں سو سے زائد سائنس دانوں نے کہا تھا کہ zika وائرس کی وجہ سے برازیل کے شہر ریو میں ہونے والے اولپکمس تبدیل یا انہیں ملتوی کردینے چاہیں ۔ جس کے جواب میں عالمی ادارئہ صحت نے کہا ہے کہ اولمپکس کے مقابلوں کا مقام تبدیل کرنے سے zika وائرس کو پھیلنے سے نہیں روکا جا سکتا۔ تاہم عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ برازیل نے اس وائرس سے بچاؤ کے لیے اہم تدابیر پر عمل کر لیا ہے۔ مزید پڑ ھیں

5 – اور پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے چیئرمین ڈاکٹر عمر سیف کو امریکی صدر باراک اوبامہ کی جانب سے امریکہ میں ہونے والی ساتویں گلوبل enterpreneurship summit 2016 میں پاکستان کی نمائندگی کرنے کے لیے مدعو کیا گیا ہے۔ ترجمان پی آئی ٹی بی کے مطابق یہ پہلا موقع ہے کہ کسی بھی پاکستانی کو اس معیار کی عالمی کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔ ڈاکٹر عمر سیف کا شمار دنیا کے تسلیم شدہ چند اعلی پائے کے کمپیوٹر سائنس دانوں میں ہوتا ہے۔ انہوں نے پاکستان میں جدید ٹیکنالوجی اور ای گورننس کے فروغ میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ جس سے نہ صرف پاکستان بلکہ دوسرے ممالک بھی استفادہ کر رہے ہیں۔ان کی خدمات کے اعتراف میں حکومتِ پاکستان نے انہیں اعلی سِول ایوارڈ ستارئہ امتیاز سے نوازا تھا۔

Authors

*

Top