Global Editions

میز جتنی چھوٹی ٹربائین جو ایک قصبے کو بجلی سپلائی کر سکتی ہے

جی ای گلوبل G.E.Globel)) ریسرچ نامی ادارہ ان دنوں ایک ایسی چھوٹی ٹربائین کے تجربات میں مصروف ہے جو تقریباً دس ہزار گھروں پر مشتمل قصبے کو بجلی مہیا کر سکتی ہے۔ بجلی تیار کرنے والا یہ یونٹ کاربن ڈائی آکسائیڈ کے زنجیری تعامل سے کام کرتا ہے۔ جس میں ایک جانب تو نہایت زیادہ دبائو اور 700 ڈگری سینٹی گریڈ کا درجہ حرارت ہوتا ہے اور اس حالت میں کاربن نہ تو گیس کی شکل میں ہوتی ہے اور نہ سیال کی صورت میں بعد ازاں گیس ایک دوسری ٹنل کی جانب سفر کرتی ہے جہاں اس کو ٹھنڈا کیا جاتا ہے اور دوبارہ پریشرآئزڈ کیا جاتا ہے تاکہ اسے ایک دوسرے پاس کی جانب موڑا جا سکے۔ مختصر حجم رکھنے کے باعث اس ٹربائین کو جلدی چالو یا بند کیا جا سکتا ہے یہ خوبی اس ٹربائین کو گرڈ سٹوریج کے لئے زیادہ سود مند بناتی ہے۔ یہ ٹربائین اپنے حجم میں سٹیم ٹربائین کے مقابلے میں اس کے حجم کا دسواں حصہ ہے جبکہ استعدادکار میں یہ اس کے ہم پلہ ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ یہ ٹربائین ہیٹ کو بجلی میں تبدیل کرنے کی اضافی صلاحیت بھی رکھتی ہے۔ GE کی جانب سے اس ٹربائین کے بنائے گئے پروٹو ٹائپ کی مدد سے دس میگاواٹ تک بجلی پیدا کی جا سکتی ہے تاہم کمپنی کو امید ہے کہ اس کی پیداواری صلاحیت کو 33 میگاواٹ تک بڑھایا جا سکتا ہے۔ سٹیم سے بجلی پیدا کرنے کے روایتی طریقے کےتحت ٹربائین کو چلانے کے لئے کم سے کم تیس منٹ درکار ہوتے ہیں جبکہ اس کاربن ڈائی آکسائیڈ ٹربائین کو سٹارٹ کرنے کے لئے صرف ایک سے دو منٹ درکار ہوتے ہیں۔ اس حوالے سے GE انجئینرنگ کے انچارج ڈوگ ہوفر (Doug Hofer) کا کہنا ہے کہ ہم معیشت کی بہتری کے لئے لاگت کو کم کرنا چاہتے ہیں۔

تحریر: ڈیوڈ ٹالبوٹ (David Talbot)

Read in English

Authors

*

Top