Global Editions

سطح زمین پر پانی کی نشاندہی کے لئے مشینی ذہانت کا استعمال

پانی انسانی زندگی کے لئے نہایت اہم ضرورت ہے اور عالمگیر سطح پر اب اس امر کا احساس ہوتا جا رہا ہے کہ زمین پر پانی کی قلت بڑھتی چلی جا رہی ہے۔ اسی قلت کے پیش نظر اس امر کی ضرورت محسوس کی گئی کہ اندازہ لگایا جائے کہ دنیا کی سطح پر اس وقت کہاں کہاں پانی موجود ہے اس کے لئے اوربیٹل ان سائٹ (Orbital Insight) نامی کمپنی نے امریکی جیولوجیکل سروے کی جانب لینڈ سائٹ 7 اور 8 سیارے کی مدد سے حاصل ہونے والی تصاویر حاصل کی ہیں۔ اس کمپنی نے ان سیاروں کی مدد سے حآصل ہونے والی تصاویر کو اپنے بنائے گئے Neural Network میں فیڈ کیا جس کی مدد سے اس امر کی نشاندہی ہو سکے گی کہ سطح زمین پر کس مقام پر پانی موجود ہے۔ زمین پر پانی کی نشاندہی کے لئے یہ کوئی نیا عمل نہیں تاہم اس کمپنی نے پانی کی تصاویر کو نیٹ ورک میں محفوظ کیا اور تصاویر کے پکسلز کی مدد سے ان مقامات کی نشاندہی کی۔ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو جیمز کرافورڈ (James Crawford) کا کہنا ہے کہ یہ سسٹم تحقیق کاروں کے لئے نہایت مفید ہے اور سیاروں کی مدد سے حاصل ہونے والی تصاویر کی مدد سے تحقیق کار تعین کر سکیں گے کہ دنیا کے کس خطے میں پانی کی مقدار کیا ہے اور کیا اس میں کمی یا زیادتی ہو رہی ہے۔ یونیورسٹی آٖف کیلیفورنیا کے سٹیون گلاسیر (Steven Glaser) کا کہنا ہے کہ دنیا کی سطح پر پانی کی مقدار کے حوالے سے دستیاب اعدادوشمار پچاس سال پرانے ہیں اور یہ اعدادوشمار جلد ہی متروک ہو جائیں گے۔ دنیا میں بڑھتی ہوئی ماحولیاتی آلودگی اور اس کے موسمیاتی حالات پر اثرات سے اس امر کی ضرورت محسوس کی گئی کہ پہلے سے زیادہ بہتر ماڈل تیار کیا جائے تاکہ پانی کے حوالے سے زیادہ موثر معلومات حاصل ہو سکیں اور اس کی مدد سے مستقبل کی منصوبہ بندی کی جائےاور اس سے قدرتی آفات مثال کے طور پر سیلاب اور قحط سالی سے بچنے کے لئے پلاننگ کی جا سکے گی۔

تحریر: سگنے بریویسٹر (Signe Brewster)

Read in English

Authors
Top