Global Editions

خودکار گاڑیاں بنانے کےلئے گوگل اور فورڈ کمپنی مشترکہ کاوش کرینگی

خودکار گاڑیوں کی تیاری کے لئے اگرچہ کئی کمپنیاں اپنی اپنی کاوشیں جاری رکھی ہوئی ہیں تاہم ابھی تک اس میدان میں کسی کمپنی نے واضح کامیابی کا اعلان نہیں کیا اور اب خودکار گاڑیاں تیار کرنے کے ضمن میں ایک اہم شراکت سامنے آنیوالی ہے اور وہ اہم شراکت ہے گوگل اور کارساز ادارے فورڈ کے درمیان۔ اطلاعات کے مطابق دونوں ادارے مشترکہ طور پر خودکار گاڑیوں کی تیاری کے لئے ٹیکنالوجی تیار کرینگے۔ یاہو موٹرز کے مطابق دونوں ادارے اپنے اس اشتراک عمل کا اعلان جلد لاس ویگاس میں ہونے والے کنزیومر الیکٹرانکس شو میں کرینگے۔ اگر یہ اطلاعات درست ہیں تو یہ کارسازی کے میدان میں ایک اہم اور قابل ذکر پیش رفت ہے۔ کئی کمپنیاں اگرچہ اس میدان میں سرگرم ہیں تاہم ٹیسلا (Tesla) کمپنی نے ایک ایسی گاڑی متعارف کرانے میں کامیابی حاصل کی ہے جسے خودکار انداز میں بھی چلایا جا سکتا ہے اور اس کی قیمت ایک لاکھ ڈالر کے لگ بھگ ہے۔فورڈ کی جانب سے ممکنہ طور پر تیار کی جانیوالی گاڑی کی قیمت ٹیسلا کے مقابلے میں کم ہوگی اور اب بڑے اداروں کی جانب سے اس ضمن میں میدان میں آنے سے خودکار گاڑیوں اور اس میں استعمال ہونے والے سینسرز اور دیگر ساز وسامان کی قیمت بھی کم ہونے کا امکان ہے۔ فورڈ کے ساتھ اشتراک عمل سے گوگل کے لئے آٹو موبائل انڈسٹری میں قدم جمانے کا موقع ملے گا تو دوسری جانب معروف کار ساز ادارے فورڈ کو بھی مستقبل کی ضروریات سے عہدہ براء ہونے میں مدد ملے گی۔ فورڈ کمپنی نے سلیکون ویلی میں اپنی ٹیک لیب میں توسیع کا کام شروع کردیا ہے تاکہ وہ خودکار گاڑیوں کے لئے نئی ٹیکنالوجی تیار کر سکے۔ کمپنی نے اس مقصد کے لئے کئی سافٹ وئیر انجینئر بھی بھرتی کر لئے ہیں۔ گوگل کے ساتھ اشتراک عمل کے حوالے فورڈ کمپنی کے ترجمان ایلن ہال (Alan Hall) نے تصدیق یا تردید سے گریز کیا اور کہا کہ ہم مختلف امور پر مختلف اداروں اور افراد کے ساتھ رابطوں میں رہتے ہیں اور یہ فورڈ کے سمارٹ موبلٹی پلان کا حصہ ہے تاہم اس ضمن میں ہونے والی بات چیت کو کاروباری مقاصد کے تحت فی الحال منظر عام پر لانا درست نہیں۔

تحریر: ول نائیٹ (Will Knight)

Read in English

Authors
Top