Global Editions

جلد پرتکلیف یا زخم کا احساس دلانے والا مصنوعی ہاتھ تیار

انسانی ہاتھ میں سترہ ہزار ٹچ سینسرز یعنی چھونے سے پیدا ہونے والے احساسات موجود ہوتے ہیں لیکن ایک مصنوعی ہاتھ میں احساس یا محسوس کرنے کی کوئی صلاحیت نہیں ہوتی۔ تاہم اب تحقیق کار ایسے مصنوعی ہاتھ تیار کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں جن کی مدد سے مصنوعی چھونے، زخم لگنے یا تکلیف وغیرہ کے احساس کو محسوس کر سکے۔ ایم آئی ٹی سے فارغ التحصیل زھینن باؤ (Zhenan Bao) کو امید ہے کہ وہ مصنوعی ہاتھ پر لگنے والی ایسی الیکٹرانک جلد تیار کرنے میں کامیابی کے قریب ہیں جو محسوس کرنے کی صلاحیت کی حامل ہو گی۔ یہ جلد چھونے، تکلیف، زخم کے بھرنے اور اس طرح کے دیگر احساسات کو محسوس کر سکے گی۔ درحقیقت الیکٹرانک جلد مصنوعی نروس سسٹم تیار کرنے کی جانب کوششوں کے حوالے سے پہلے قدم کے طور پر تعبیر کی جا رہی ہے اگر انسانی نروس سسٹم اس الیکٹرانک جلد سے خارج ہونے والے سگنلز کو دماغ تک پہنچانے اور دماغی سگنلز سے چھونے کے احساس کو ابھارنے میں کامیاب رہتی ہے تو یہ طبی تاریخ کے ایک بڑے کارنامے کے طور پر یاد رکھی جائے گی۔ باؤ الیکٹرانک جلد کی تیاری کے لئے 2010 ءسے کام کر رہی ہے۔ اس مقصد کے لئے انہوں نے نئی کیمیائی تراکیب تیار کی ہیں جس کی مدد سے اس مصنوعی انسانی جلد میں الیکٹرانک سازوسامان نصب کیا جا سکتا ہے اور اس کی مدد سے روایتی طور پر مصنوعی انسانی اعضاء کی تیاری میں استعمال ہونے والا میٹر یل مثال کے طور پر سلیکون کو ارگینگ مالیکیولز اور ریشوں سے تبدیل کیا گیا ہے، اس کے ساتھ ساتھ اس میٹر یل میں نینو میٹر یلز کو بھی شامل کیا گیا ہے جس سے اس مصنوعی جلد میں قدرتی جلد کی مطابقت کے تحت نرمی موجود ہے۔ باؤ کی ٹیم نے اس جلد کی تیاری کے لئے اس میں الیکٹرانک سامان نصب کیا اور اس جلد کو انسانی جسم کی طرح ملائم اور لچکدار رکھنے کے لئے نہایت اعلی کوالٹی کا ربڑ بھی استعمال کیا گیا،اب اس جلد میں نہایت باریک تاروں کے ساتھ حساس ترین سینسرز بھی نصب کئے گئے ہیں تاکہ وہ مختلف اقسام کے سگنلز بھیج اور وصول کر سکیں۔ باؤ کی تحقیقی ٹیم نے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے ٹرانسسٹرز، الیکٹرک لیڈز اور دیگر سامان بھی پرنٹ کیا تاکہ وہ لچکدار سرکٹس تیار کر سکیں اور ان میں سے سگنلز گزر پائیں۔ اب باؤ مصنوعی جلد کے لئے ایسے ریشے تیار کرنے میں مصروف ہیں جس پر اگر کٹ لگ جائے یا جل جائے تو یہ زخم بھر جائیں۔ اب اس کے ساتھ باؤ کی ٹیم سیمی کنڈکٹرز کی تیاری میں بھی مصروف ہے۔ مصنوعی جلد کے لئے الیکٹرانک سامان تیار کرنا اپنی جگہ لیکن ابھی منزل دور ہے کیونکہ ابھی مصنوعی الیکٹرانک انسانی جلد کی جانب سے سگنلز کو بھجوانے اور سگنلز کو وصول کرنے کے لئے نروس سسٹم تک رسائی کا طریقہ کار وضع کرنا باقی ہے اور امید کی جا سکتی ہے کہ یہ مرحلہ بھی مکمل ہو جائے گا تاہم اس لئے وقت درکار ہے اور وقت کی حد کا تعین نہیں کیا جا سکتا۔

تحریر: کیتھرائن بورزیک (Katherine Bourzac)

so16demo.5x2000 so16demo.11x1400 so16demo.2x1400 so16demo.3x1400 so16demo.9x1400

Read in English

Authors

*

Top