Global Editions

اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم۔۔۔۔ گوگل کے لئے مشکل کا سبب بن گیا

گوگل کی جانب سے متعارف کرایا جانیوالا سمارٹ فونز کا آپریٹنگ سسٹم اینڈرائیڈ دنیا میں موبائل فونز میں سب سے زیادہ استعمال ہونیوالا آپریٹنگ سسٹم بن گیاہے۔ گوگل نے سال 2008 ء میں QWERTY کی بورڈ متعارف کرایا جس کے بعد اس کے آپریٹنگ سسٹم نے شہرت کی بلندیوں کو چھو لیا تھا۔ اس وقت اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم کے استعمال کنندگان کی تعداد ایک ارب سے تجاوز کر چکی ہے، اور اسے دنیا بھر میں سمارٹ فونز تیار کرنیوالے ادارے استعمال کر رہے ہیں۔ اس کامیابی کے باوجود گوگل کو اپنے حریف ایپل کے مقابلے میں زیادہ مشکلات کا سامنا ہے کیونکہ ایپل صرف اپنی مصنوعات کے لئے ہارڈ وئیر اور آپریٹنگ سسٹم تیار کرتا ہے جبکہ گوگل کی جانب سے تیار کیا جانیوالا آپریٹنگ سسٹم تمام موبائل ساز ادارے استعمال کرتے ہیں، مسئلہ یہ ہے کہ گوگل کئی برسوں سے اپنے آپریٹنگ سسٹم کے لئے اپ ڈیٹس جاری کرتا رہتا ہے اور اس وقت اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم کے کئی ورژن مارکیٹ میں موجود ہیں اور موبائل ساز ادارے اپنی سہولت کے مطابق کوئی سا بھی ورژن استعمال کر رہے ہیں۔ موبائل ساز اداروں کو کوئی سا بھی ورژن استعمال کرنے کی کھلی چھٹی کے باعث اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم استعمال کرنے والوں کے ڈیٹا کی سیکورٹی کو شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں کیونکہ گوگل کو ہر طرح کے ورژن کو استعمال کرنیوالوں کے ڈیٹا کی سیکورٹی کے لئے الگ الگ انتظامات کرنا پڑتے ہیں۔ اسی طرح مختلف سمارٹ فونز جدید ایپس اور اینڈرائیڈ فیچرز یا تو استعمال ہی نہیں کر سکتے یا انہیں اس کے استعمال کے دوران مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اینڈرائیڈ کے مختلف ورژنز کو الگ الگ رکھنا ایک نہایت مشکل امر ہے۔ اس حوالے سے گوگل ہی کی جانب سے جاری کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق 7.5 فیصد سمارٹ فونز میں اینڈرائیڈ ورژن مارش میلو (Marshmallow) استعمال ہو رہا ہے یہ گوگل کی جانب سے متعارف کرایا جانیوالا جدید ترین آپریٹنگ سسٹم ہے، رپورٹ کے مطابق 35.6 فیصد صارفین گوگل کے ورژن لالی پاپ (Lollipop) استعمال کر رہے ہیں یہ ورژن2014 ءکے اواخر میں جاری کیا گیا تھا جبکہ 32.5 فیصد صارفین ابھی تک اینڈرائیڈ کے ابتدائی اور پرانے آپریٹنگ سسٹم کٹ کیٹ (KitKat) استعمال کر رہے ہیں۔ اس کے مقابلے میں ایپل آئی فون کی جانب سے ایسی ہی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس کے 84 فیصد صارفین اس کے تازہ ترین آپریٹنگ سسٹم iOS 9,11 استعمال کر رہے ہیں جبکہ گیارہ فیصد صارفین iOS 8 اور پانچ فیصد صارفین اس سے بھی پرانا سافٹ وئیر استعمال کر رہے ہیں۔ اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ گوگل کے پاس اس مسئلے کا کیا حل ہے؟ اس حوالے سے بلوم برگ کے مطابق اب گوگل یہ چاہتا ہے کہ موبائل فون ساز ادارے اور وائرلیس کمپنیاں اپنے اپنے ہینڈ سیٹس جلد از جلد اپ ڈیٹ کریں اور اپنے فونز میں اینڈرائیڈ کا نیا ورژن متعارف کرائیں اس کے نتیجے میں کمپنی اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم استعمال کرنے والوں کی سیکورٹی کے لئے فوری اقدامات کے قابل ہو سکے گی اور اس کے ساتھ ساتھ اینڈرائیڈ کے صارفین بھی جدید ایپلی کیشنز سے لطف اندوز ہو سکیں گے۔

تحریر: ریچل میٹز (Rachel Metz)

google-nexus-imprint-1

Read in English

Authors

*

Top