Global Editions

ادویات کی بروقت ترسیل کیلئے ڈرونز کا استعمال

روانڈا جیسے دور افتادہ افریقی ملک میں مریضوں کے لئے ادویات اور خون کے بیگ فراہم کرنے کے لئے زیادہ فاصلے تک پرواز کی اہلیت رکھنے والے ڈرونز کے نیٹ ورک کی مدد لی جا رہی ہے۔ زپ لائن( Zipline) نامی ایک کمپنی نے اس ضمن میں ڈلیوری ڈرونز کے میدان میں اہم قدم اٹھایا ہے اور اس افریقی ملک میں انسانی فلاح کے لئے ڈرونز کی مدد لینے کے لئے میدان عمل میں آئی ہے۔ تاہم ابتدائی طور پر ڈرونز کی مدد صرف ان حالات یا مقامات تک ہی لی جائیگی جہاں فوری طور پر ہنگامی حالات کے باعث رسائی ممکن نہ ہو۔ زپ لائن اس فلاحی مقصد کے لئے روانڈا کی حکومت کے تعاون سے ڈلیوری ڈرونز کا نیٹ ورک قائم کر رہی ہے تاکہ ملک بھر میں ادویات اور دیگر طبی سامان کی ترسیل کی جا سکے۔ یہ نیٹ ورک 15 ڈرونز کے نیٹ ورک کی مدد سے روزانہ کی بنیاد پر 50 سے 150 پروازوں کے ذریعے سامان اور ادویات کی ترسیل کر سکے گا۔ ہر ڈلیوری ڈرون میں دو الیکٹرک موٹریں لگی ہونگی اور ان کے پر آٹھ فٹ طویل ہونگے۔ یہ ڈرونز پرواز کے لئے جی پی ایس سسٹم کی مدد لیں گے اور طبی سامان فضا سے گرانے کے بعد مقررہ ائیر سٹرپ پر لینڈ کرے گا۔ یہ بہت حیران کن لگتا ہے کہ روانڈا جیسا افریقی ملک دنیا کا وہ پہلا ملک بننے جا رہا ہے جہاں طبی سامان کی ترسیل کی لئے ڈلیوری ڈرونز کی مدد لی جائے گی۔ اگرچہ امریکہ میں بھی کئی ادارے گھریلو سازوسامان کی ترسیل کے لئے ان ڈلیوری ڈرونز کی مدد لینے کے خواہشمند ہیں تاہم ابھی تک سخت قوانین ہونے اور اس حوالے سے قواعد وضوابط کی ابھی تک تشکیل نہ ہونے کے باعث یہ معاملہ ابھی تک التوا کا شکار ہے۔ تاہم روانڈا کے لئے زپ لائن کا یہ پراجیکٹ اس امر کا غماز ہے کہ کس طرح ڈرونز کو روزمرہ مقاصد کے لئے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ عالمی ادارہ صحت کی ڈائیریکٹر جنرل مارگریٹ شون نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس انقلابی اقدام سے روانڈا میں عوام کو صحت کی سہولیات فراہم کرنے میں بہت مدد ملے گی۔

تحریر: ول نائیٹ (Will Knight)

flyzipline from Technology Review Pakistan on Vimeo.

Read in English

Authors

*

Top