Global Editions

اب کاروبار دنیا انٹرنیٹ سے منسلک ہو گا

انٹرنیٹ ٹیکنالوجی گزشتہ کئی دہائیوں سے دنیا بھر تہلکہ مچا رہی ہے اب عام استعمال کے ٹیلی فون سے لیکر جہازوں کے لئے سمت کے تعین کے لئے بھی انٹرنیٹ ٹیکنالوجی استعمال ہو رہی ہے جس سے اس کی افادیت ثابت ہو رہی ہے۔ حال ہی میں مختلف سرکاری امور چلانے کے لئے بھی انٹرنیٹ آف تھنگز ( IoT )ٹیکنالوجی کے استعمال کا رحجان بڑھ رہا ہے۔ اب ریل نیٹ ورک سے بندرگاہوں پر کارگو ہینڈلنگ سے لیکر زیرزمین نیٹ ورک سے ائیرپورٹس کےانتظام تک تمام نظام انٹرنیٹ آف تھنگز کے ذریعے ہوگا۔ اسی تناظر میں ڈچ ٹیلی کام کمپنی KPN نے ہالینڈ میں ملک گیر وائرلیس نیٹ ورک قائم کرنے کا اعلان کیا ہے جس سے تمام کاروبار حکومت نہایت موثر انداز اور کم لاگت میں چلائےجا سکیں گے۔ انٹرنیٹ سے منسلک ایسے ہی نظام اس وقت جرمنی، فرانس اور جنوبی کوریا سمیت دنیا بھر میں قائم کئے جا رہے ہیں اور کئی ممالک میں اس وقت موثر انداز میں کام بھی کر رہے ہیں۔ اس طرح ہالینڈ بھی ان ممالک کی فہرست میں شامل ہو گیا ہے جو امور حکومت چلانے کے لئے انٹرنیٹ ٹیکنالوجی کی مدد لے رہے ہیں۔ ہالینڈ میں اس وائرلیس سروس کے لئے KPN نے 15 لاکھ ڈیوائسز کوایک دوسرے سے لنک کیا جائیگا۔ اس حوالے سے کمپنی کے ایگزیکٹو انچارج آف موبائل سروسز جیکب گروٹ کا کہنا ہے کہ ان ڈیوائسز کو ابھی تک لنک نہیں کیا گیا تاہم انہیں جلد لنک کر دیا جائیگا اور اس لنکنگ کے بعد کمپنی کو خاطر خواہ مالی منفعت حاصل ہو گی۔ ان کا کہنا تھا کہ سال 2015 ءمیں کمپنی کا سالانہ ریونیو 7.72 بلین ڈالر تھا۔ گروٹ کا مزید کہنا ہے کہ انٹرنیٹ آف تھنگز کے استعمال سے کئی طرح صارفین کو بھی بہت فائدہ ہو گا۔ اس ٹیکنالوجی کے تحت انفراسٹرکچر کی دیکھ بھال کے لئے سینسرز کا استعمال کیا جائیگا تاکہ رسک کے امکانات کو کم سے کم کیا جا سکے۔ اسی طرح ٹریفک کے اشاروں اور ٹریفک کنٹرول، سیکورٹی کے لئے بھی IoT سینسرز استعمال کئے جائیں گے۔ KPN اس نیٹ ورک کی تیاری کے لئے اٹھنے والے اخراجات کو پورا کرنے کے لئے ان ڈیوائسز کی قیمت وصول کریگی اور یہ ڈیوائسز فور جی نیٹ ورک سے منسلک ہونگی۔ ان ڈیوائسز کی قیمت ڈیٹا ضروریات کے تحت 4.50 ڈالرز سے 16.50 ڈالرز کے درمیان ہونگی۔ اس حوالے سے KPN کے پیڈرو ڈی سمتھ Pedro De Smit نے بتایا کہ نیٹ ورک تیار کر لیا گیا ہے تاہم اس کو چلانے کے لئے ریونیو درکار ہے جس کے لئے ڈیوائسز کی فروخت کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ KPN نے اعلان کیا ہے کہ وہ اس سال کے آخر تک ملک گیر کوریج شروع کر دیگی۔

تحریر: رس جسکالین (Russ Juskalian)

Read in English

Authors
Top